o تو مرے ساتھ ہی تھا پھر بھی میں تنہا کیوں تھا ترے ہوتے ہوے ...

o زندگی کے پار بھی کوئی حیاتِ جادوانی ہے کہ کیا ہے اس کہانی سے ...

o شفق کے رنگ میں صبحِ صدا کے ساتھ رہنا تھا سکوتِ شام میں اس ...

غبارِ رہ سا پڑا ہوں کنارِ راہگزار کبھی ادھر سے بھی گزرے گا محملِ دلدار ...

o یادِ نشاطِ وصل یا ہجراں کے آس پاس ہم نے گزار دی انھی گزراں ...

لگا ہے جب سے مرے دل کو عشق کا آزار کلیجہ کاٹتی رہتی ہے سانس ...

وہی ہوں میں وہی میری ازل کی حیرانی وہی ہے تو وہی تیرا جمالِ لاثانی ...

بحضورِ سرورِ کونین محمد رسول ﷺ چلا ہے جانبِ بطحا سے کاروانِ بہار پیام لائی ...

بحضور سرور کونین محمد رسول اللہ ﷺ (بہ فیض توجہ بابا فرید گنج شکر ؒ) ...