لاج   کی   لالی   نین   کنول   میں   رہتی  تھی ایک  لڑائی  جل   ،   کاجل  میں  رہتی  ...

بحضورِ سرورِ کونین محمد رسول ﷺ چلا ہے جانبِ بطحا سے کاروانِ بہار پیام لائی ...

جاں بکف جام بَلَب کچھُ بھی نہیں لَوٹ آیا ہوں سَبَب کچھُ بھی نہیں کَون ...

ازل سے یہ رسم چلی آتی ہے ، اہل ہجر دیواروں اور ستونوں سے لپٹ ...

بحضور سرور کونین محمد رسول اللہ ﷺ (بہ فیض توجہ بابا فرید گنج شکر ؒ) ...

(۲) چناں چہ بالشوزم اور فاشزم نام کے بظاہر دو ایسے نئے زاویہ ہاے نگاہ ...

اک گوشہِ خیالِ ہمیشہ بہار میں، تُو اور میں الگ۔ کوئی نہ آس پاس، ندارد ...

اس بوسے کے ساتھ تری زباں نے مری زباں پر ایک گلاب اگایا جس کی ...

O رہوں خموش تو جاں لب پہ آئی جاتی ہے جو کچھ کہوں تو قیامت ...

دیواروں سے ٹکرانا سَر رُکنا مت پانی ہو جائیں گے پتّھر رُکنا مت دِہلیزیں، زنجیریں ...