چلو اِک بار پھر سے اجنبی بن جائیں ہم دونوں

یہ تحریر 136 مرتبہ دیکھی گئی